کشمیر کی حیثیت کو تبدیل کر دیا جاے گا۔80 لاکھ کشمیری کی نسل کشی کی منصوبہ بندی ہو گئ۔ تمام گر فتار کشمیری شہید ہو جائیں گے۔ بچے بوڑھے جوان  سب قابض بھارتی مسلح فوج کے سامنے  بے بسی کی زندہ تصویر بن کر موت  کی گود میں چلے جائیں گے قحط کی صورت حال پیدا کر دی گئ۔

پاکستان کے خلاف  ایٹمی جنگ کی ناپاک جسارت ہندوستان کر چکا۔ کشمیر کی تحریک آزادی کو مکمل طور پر کچل دیا جاےگا ۔ بھارتی سیکورٹی فورسز مظلوم کشمیریوں  پر مہلک ہتھیاروں کا استعمال کر تی رہے گی۔اور  پیلٹ گن کے ذریعے کشمیریوں کوبینائی سے محروم کرتی رہے گی۔

گمانوں کی ان تاریک راتوں میں گھری وادئ کشمیر میں  یقین کے چراغ ہم جلائیں گے۔ ہم پاکستا نیوں کی  کشمیریوں سے محبت لازوال ہے۔ 

نہ صرف پاکستان کی فوج بلکہ پاکستان کی عوام بھی جزبہ شہادت سے سرشار یے۔ ہم زٙر کی ہوس کو ٹھوکر مار کر  اپنے دینی بھائیوں کی مدد کو جائیں گے۔

کشمیر پاکستان کی شہ رگ ہے۔ہم اقوام متحدہ  کی سلامتی کونسل میں عقلی دلائل سے سفارتی کامیابی حاصل کریں گے۔ یمارے جزبے صبحِ آ زادی تک قائم و دائم رہیں گے۔ مودی درندہ صفت کشمیریوں کو مار تو سکتا ہے لیکن ان کی نظریاتی سوچ کو ختم نہیں کر  سکتا۔ کیونکہ  کشمیری عوام کے جذبہ حق خودارادیت کا مقابلہ فوج بڑھانے سےنہیں کیا جاسکتا، تاریخ نے ثابت کیا کہ آزادی کے جذبے کو طاقت سے  ڈرایا  نہیں جا سکتا۔   

من حیث لقوم ہماری اجتماعی جدوجہد سے  ریاست جموں  کشمیر ایک آزاد خودمختار ریاست کے طور پر ابھرے گی۔آ رمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے  کہاہے کہ پاکستان آرمی کشمیریوں کی   منصفانہ جدوجہدکاآخری حد تک ساتھ دیے گی ۔پاکستان مقبوضہ کشمیرپربھارتی تسلط کبھی تسلیم نہیں کریگا۔ پاکستان نے کبھی بھی مقبوضہ کشمیر میں ،370 یا 35 اے کو قبول نہیں کیا ۔ پاک افواج کشمیری عوام کیساتھ ہے۔ ہم ہرطرح کے حالات سے نمٹنے کیلئے تیارہیں۔  وزیر اعظم عمران خان کا کہنا یے کہ میں  بطور سفیر مقبوضہ کشمیر کے عوام کی آواز دنیا کے ہر فورم پر اٹھاؤں گا۔اور انھوں نے اس بات پر زور دیا یے کہ مقبوضہ کشمیر میں بھارتی ظلم و ستم کے خلاف  پاکستانی عوام اور انسانی حقوق کی  عالمی تنظیموں کو متحرک کیا جائے ۔

Contributor, Iram Saba

ہم کشمیر کی آزادی تک اپنی جدوجہد جاری رکھیں گے ۔ہم مناسب حکمت عملی سے  بہترین اور موثر پالیسی بنا کر بھارت کی طرف سے کشمیریوں پر ڈھائے جانے والے قیامت خیز تشدد کی طرف عالمی توجہ مبذول کروائیں گے۔ ہم تنازعہ کشمیر پر اقوام عالم کی توجہ اس وقت تک مبذول کرواتے رہنیں گے جب تک کشمیریوں کو آزادی مل نہیں جاتی جو ان کا بنیادی حق یے اور بھارت کا اصلی مکروہ چہرہ بھی دنیا کے سامنے لبے نقاب کریں گے۔

گمانوں کی ان تاریک راتوں میں   ہم یقین کے چراغ جلائیں گے اور  کشمیر کو آزاد کروائیں گے۔ ۔۔۔.