اسلام آباد(روزنامہ حروف آن لائن)پی آئی اے کی نجکاری قبول نہیں ۔ایسا کوئی بھی فیصلہ آئندہ آنے والی حکومت پر چھوڑ دیا جائے ۔یہ بات سینیٹ کی قائمہ کمیٹی برائے نجکاری نے اپنے اجلاس میں کہی ۔کمیٹی نے مشیر ہوا بازی اور نیپرا حکام کو بریفنگ کے لئے آئندہ اجلاس میں طلب کر لیا۔ چیئرمین قائمہ کمیٹی سینیٹر محسن عزیز کی صدارت میں اجلاس ہوا تو وزارت نجکاری کے حکام نے بتا یا کہ فیصل آباد ، گوجرانوالہ ،الیکٹرک سپلائی کمپنی اور جام شورو پاور پلانٹ کی نجکاری کا منصوبہ زیر غور جبکہ نجکاری لسٹ میں ریلوے کا نام بھی موجود ہے۔ کمیٹی کو بتایا گیا کہ جلد عملدرآمد کےلئے ایس ایم ای بنک ،ماڑی پیٹرولیم ، پاکستان سٹیل مل اور پی آئی اے کے نام سرفہرست ہےں۔اجلاس میں سینیٹر نسرین جلیل ،سینیٹر سلیم مانڈوی ولا ، سینیٹر نہال ہاشمی نے شرکت کی۔