نئی دہلی(مانیٹرنگ ڈیسک) بھارت میں اسلامی شریعت کے قوانین کا کھلے عام مذاق، لڑکی امام مسجد بن گئی ٹائمز آف انڈیا کے مطابق یہ آفسوس ناک واقعہ ریاست کیرالہ کے شہر ملپورم میں پیش آیا۔ جمیدا نامی ایک لڑکی نے گزشتہ جمعہ المبارک کی نماز پڑھائی جبکہ درجنوں مردوں نے اس لڑکی کی امامت میں نماز پڑھی۔ بعد ازاں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے جمیدا نے دعویٰ کیا کہ اسلام میں کہیں نہیں کہا گیا کہ صرف مرد ہی امام بن سکتا ہے۔ یہ روایت مولویوں نے قائم کی ہے۔ اس نے یہ دعویٰ بھی کیا کہ وہ یہ روایت توڑنا چاہتی تھی دوسری طرف نام نہاد جمیدا کے اس اسلام مخالف اقدام پر بھارتی مسلمانوں میں شدید غصہ پایا جاتا ہے بھارتی مسلمان اس سے اسلام دشمن قوتوں کی کارروائی قرار دے رہے ہیں ۔