لاہور (مانیٹرنگ ڈیسک) زینب قتل کیس کے مرکزی ملزم عمران کے بینک اکاﺅنٹس کی تحقیقات کیلئے قائم کی گئی جے آئی ٹی کے اجلاس میں ڈاکٹر شاہد مسعود پیش نہیں ہوئے۔نجی ٹی وی نے ذرائع کے حوالے سے دعویٰ کیا ہے کہ ڈاکٹر شاہد مسعود نے دعویٰ کیا تھا کہ زینب قتل کیس کے مرکزی ملزم عمران کے 37 بینک اکاﺅنٹس ہیں۔ اینکر پرسن کے اس دعویٰ کی تحقیقات کیلئے وزیر اعلیٰ پنجاب نے جے آئی ٹی تشکیل دے دی تھی جس کا پہلا اجلاس جمعہ کو ہوا۔ جے آئی ٹی نے ڈاکٹر شاہد مسعود کو اجلاس میں طلب کیا تاہم وہ جے آئی ٹی کے روبرو پیش نہیں ہوئے۔جے آئی ٹی نے شاہد مسعود ہفتہ کے روز پیش ہونے کے لئے خط بھی لکھ دیا ہے ۔یاد رہے جے آئی ٹی کے پہلے ہی اجلاس میں ڈاکٹر شاہد مسعود کا دعویٰ غلط ثابت ہوا اور تحقیقاتی ٹیم کو ملزم کے کسی بینک اکاﺅنٹ کا سراغ نہیں ملا۔ سٹیٹ بینک آف پاکستان کو بھی ملزم کے کسی بینک اکاﺅنٹ کا پتہ نہیں چلا جبکہ عمران کا قصور کے 12 بینکوں میں ایک بھی اکاﺅنٹ نہیں ہے اور نہ ہی اس کے شناختی کارڈ پر کوئی بینک اکاﺅنٹ کھلا ہوا ہے۔