لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک)زینب کے قاتل عمران کا کوئی ساتھی نہیں وہ اکیلا ہی ملزم ہے رپوٹ نے ثابت کر دیا ۔ترجمان پنجاب حکومت ملک محمد احمد خان نے نجی ٹی وی کو بتایا کہ کچھ لوگوں نے اس واقعے سے سیاسی مفادات حاصل کیے ،ویڈیو سکینڈل کی آڑ میں پورے گاﺅں کو بدنام کیا گیا ڈی این اے رپورٹس سے تصدیق ہوگئی ہے کہ ایک ہی ملزم تھا۔ترجمان حکومت پنجاب نے کہا کہ ملزم مدثر کی ہلاکت کی تفتیش کی جارہی ہے جو بھی ماورائے عدالت قتل ہوگا اس کی جوڈیشل انکوائری کی جائےگی۔